امریکی ریاست لوزیانا میں قتل ہونیوالے پاکستان خرم امیر کی نماز جنازہ ، جسد خاکی پاکستان روانہ

 
شریو پورٹ، لوزیانا(محسن ظہیر) امریکی ریاست لوزیانا میں نامعلوم شخص نے ایک جواں سال پاکستانی بزنس مین کو قتل کر دیا ۔ لوزیانا میں مقیم پاکستانی امریکن راجہ واجد شکیل اور مقامی میڈیا رپورٹس کے مطابق بتیس سالہ خرم امیرچوبیس اور پچیس فروری کی درمیانی رات شریو پورٹ ، لوزیانا سے اپنے گھر واقع یونیورسٹی ڈرائیو پر پہنچا اور گاڑی پارک کرکے باہر نکلا تو مبینہ طور پر ایک نامعلوم شخص نے اس سے کوئی بات کی اور پھر اسے گولی مار کر جائے وقوعہ سے فرار ہو گیا۔

 

 

امیر خرم کے ہمسائے گولی کی آواز سننے کےبعد باہر نکلے تو انہوں نے اسے زخمی حالت میں دیکھ کر پولیس کوکال کی ۔ بتایا گیا ہے کہ واردات کے وقت امیر خرم کی بیوی بھی اپنے دو چھوٹے بچوں بیٹی اور بیٹے کے ساتھ گھر پر موجود تھی لیکن رات ایک بجے کا وقت ہونے کی وجہ سے وہ گھر میں سو رہی تھی اور اسے معلوم نہیں ہوا کہ باہر گولی چلی اور شوہر زخمی ہوگیا

بتایا گیا ہے کہ پولیس اور ایمبولنس جب جائے وقوعہ پر پہنچی تو اس وقت تک زخمی امیر خرم دم توڑ چکا تھا۔ مقتول کا تعلق پنجاب کے ضلع حافظ آباد سے تھا اور اس کے پسماندگان میں ایک بیٹی، بیٹا اور بیوہ شامل ہے ۔ وہ گذشتہ چند سالوں سے لوزیانا کے علاقے شریوپورٹ میں رہ رہا تھا ۔

پولیس حکام نے قتل کی اس واردات کی رپورٹ درج کرنے کے بعد وجہ قتل معلوم کرنے اور قاتلوں کی تلاش کا کام شروع کر دیا ہے

تاریخ اشاعت : 2014-03-06 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock