وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی نیویارک میں ایرانی صدر سے اہم ملاقات

 

وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی نیویارک میں ایرانی صدر سے اہم ملاقات
پاک ایران تعلقات ، بارڈر مینجمنٹ ، تجارت اور سرمائیہ کاری سمیت دو طرفہ اہم امور پر بات چیت ہوئی


ملاقات میں افغانستان سمیت خطے کی صورتحال پر تفصیلی بات چیت ، روہنگیا مسلمانوں کے خلاف جاری کاروائیوں کی مذمت


نیویارک (محسن ظہیر سے) وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی کی منگل کو جنرل اسمبلی کی سائیڈ لائینز پر ہونیوالی ملاقاتوںمیں اہم ملاقات ایرانی صدر حسن روحانی سے ہوئی ۔ملاقات میں دونوں قائدین نےپاک ایران تعلقات کے دو طرفہ امور سمیت ان تعلقات کو ہر شعبے میں وسعت دینے اور مضبوط کرنے کے حوالے سے تفصیلی بات چیت کی ۔


وزیر اعظم عباسی نے ایرانی صدر سے کہا کہ پاکستان خطے میں امن کی پالیسی پر گامزن رہتے ہوئے اپنے ہمسائے اور خطے میں تمام ممالک سے اپنے تعلقا ت کو مضبوط کرنا چاہتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اور ایران میں اعلیٰ سطح روابط کو مزید فروغ دے کر مشترکہ مفادات کے حصول کو یقینی بنانا چاہئیے ۔


ایرانی صدر حسن روحانی نے وزیر اعظم عباسی سے کہا کہ دونوںممالک کو بارڈر مینجمنٹ ، تجارت اور سرمائیہ کاری سمیت دیگر شعبوں میں ایک دوسرے کے ساتھ ملکر آگے بڑھنا ہوگا اور اپنے مفادات کے حصول کو یقینی بنانا ہوگا ۔ اس سلسلے میںایران پرعزم ہے ۔


وزیر اعظم نے ایرانی صدر کو ایران کی جانب سے کشمیری عوام کے حق خودارادی ت کی جدوجہد کی تائید کی پالیسی کو سراہا ۔


پاک ایران قائدین کی اس ملاقات میں افغانستان کی صورتحال بالخصوص زیر بحث آئی ۔انہوں نے اس بات پر اتفاق کیا کہ افغانسان کے مسلہ کا فوجی نہیں بلکہ بات چیت سے سیاسی حل نکالنا چاہئیے ۔انہوں نے کہا کہ افغانستان میں عدم استحکا م کے خطے میں تمام ممالک پر اثرات مرتب ہوتے ہیں اور تمام ممالک چاہتے ہیں کہ اس مسلہ کا جلد از جل پرامن حل ہو ۔


ایرانی صدر اور وزیر اعظم نے روہنگیا مسلمانوں کے خلاف جاری کاروائیوں کی مذمت کی ۔

 ۔

تاریخ اشاعت : 2017-09-19 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں

SiteLock