تمباکو نوشی کے عادی افراد کے لیے اس سے جان چھڑانے کے لیے بچپن کی یادوں کے بارے میں سوچنا کسی انسداد تمباکو مہم کی خوفناک تصاویر کے مقابلے میں زیادہ موثر ثابت ہوتا ہے۔ تحقیق

کیا سیگریٹ سے جان چھڑانا چاہتے ہیں؟ تو سب سے آسان طریقہ یہ ہے کہ بچن کی یادوں کو اپنے ذہن میں اجاگر کریں جس سے اس لت کو چھوڑنے کی ہمت مل سکے گی۔ یہ دعویٰ امریکا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں سامنے آیا۔ مشی گن اسٹیٹ یونیورسٹی کی تحقیق کے مطابق تمباکو نوشی کے عادی افراد کے لیے اس سے جان چھڑانے کے لیے بچپن کی یادوں کے بارے میں سوچنا کسی انسداد تمباکو مہم کی خوفناک تصاویر کے مقابلے میں زیادہ موثر ثابت ہوتا ہے۔ تحقیق میں بتایا گیا کہ اپنی یادوں میں گم ہونا تمباکو نوش کو مگن رکھتا ہے جو کہ اسے اس لت کی جانب متوجہ نہیں ہونے دیتا۔ اس تحقیق کے دوران 18 سے 39 سال کے سیگریٹ نوشی کے عادی افراد میں کچھ کو انسداد تمباکو نوشی کے پیغامات جبکہ بچپن کی سنہری یادوں کے ذریعے اس لت سے پیچھے چھڑانے کے لیے حوصلہ افزائی کی گئی۔ نتائج سے معلوم ہوا کہ بچپن کی یادوں کے تجربے سے گزرنے والے افراد نے تمباکو نوشی چھوڑنے کے حوالے سے مضبوط اور مثبت ردعمل کا اظہار کیا۔

تاریخ اشاعت : 2017-02-19 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock