ایاز صادق کے بیان نے سیاسی منظرنامے پر چھائے بادل مزید گہرے کر دیئے 

سپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق کے بیان نے سیاسی منظرنامے پر چھائے بادل مزید گہرے کر دیئے، ایاز صادق نے نہ صرف رواں اسمبلی کے تسلسل پر خدشات کا اظہار کیا بلکہ یہ بھی بتایا کہ حکمران جماعت کی صفوں میں تخریب کا عمل اس سے کہیں زیادہ ہے جتنا کہ اس بارے میں اندازے لگائے جارہے ہیں۔ سپیکر ایاز صادق کے بیان نے لڑکھڑاتے سیاسی نظام کے گرنے کا عمل مزید تیز کر دیا، ایاز صادق نے جاری سیاسی نظام سے جس مایوسی کا اظہار کیا اس سے حکمران جماعت ن لیگ میں جاری انتشار کی درست عکاسی ہوتی ہے۔

 

ایاز صادق نے نہ صرف رواں اسمبلی کے تسلسل پر خدشات کا اظہار کیا بلکہ یہ بھی بتایا کہ حکمران جماعت کی صفوں میں تخریب کا عمل اس سے کہیں زیادہ ہے جتنا کہ اس بارے میں اندازے لگائے جارہے ہیں۔

 

سپیکر قومی اسمبلی کا بیان سننے کے بعد پہلا سوال یہ ابھرتا ہے کہ آخر انہوں نے اس طرح کی گفتگو کے لیے یہی خاص موقع کیوں چنا؟ ذرائع بتاتے ہیں کہ سپیکر ایاز صادق نے خود مختلف چینلز پر فون کرکے انٹرویو دینے کی خواہش کا اظہار کیا، کیا ایسی بات کرکے ایاز صادق مقتدر حلقوں کی توجہ کسی اور جانب تو مبذول نہیں کرانا چاہتے، یا پھر وہ چاہتے ہیں کہ نظام کو لاحق سنگین خطرات اجاگر کرکے ن لیگ میں جاری انتشار کو وقتی طور پر کم کیا جاسکے۔

 

وجہ جو بھی ہو ایاز صادق کے بیان نے سیاسی بے یقینی میں کئی گنا اضافہ کردیا ہے۔ مبصرین کا کہنا ہے کہ اُن کے اس بیان کے بعد سیاسی پنچھیوں کی پرواز کا وقت آن پہنچا ہے، اب صرف یہ دیکھنا ہے کہ یہ پنچھی کس سیاسی جماعت کی منڈیر پر جا بیٹھتے ہیں۔

تاریخ اشاعت : 2017-12-14 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock