ذیابیطس ۔ اگر اس کا علاج نہ کروایا جائے تو اس سے وقت گزرنے کے ساتھ گردوں کے متاثر ہونے کا خدشہ ہوتا ہے 

مرض کی علامات ظاہر ہونے کے بعد بروقت علاج نہ کروایا جائے مرض بڑھ کر شوگر جیسی تکلیف دہ بیماری میں ڈھل جاتا ہے

 

نیویارک (دنیا نیوز ) ذیابیطس اس وقت دنیا بھر میں وباء بن جانے والی بیماری ہے، جو دیگر جان لیوا امراض کا بھی سبب بن جاتی ہے، مگر اس مرض کا شکار ہونے سے پہلے لوگوں میں بلڈ شوگر بڑھتی ہے جو آگے بڑھ کر ذیابیطس کی شکل اختیار کرتی ہے۔ اگر اس کا علاج نہ کروایا جائے تو اس سے وقت گزرنے کے ساتھ گردوں کے متاثر ہونے کا خدشہ ہوتا ہے ۔

 

تاہم ہائی بلڈ شوگر کی چند علامات یا نشانیاں سامنے آتی ہیں جنہیں دیکھ کر کسی ڈاکٹر سے رجوع کرکے اس کی روک تھام کے لیے مدد طلب کی جاسکتی ہے ۔ خشک منہ:جب گردے خون میں موجود گلوکوز کو فلٹر نہیں کرپاتے تو جسم پانی کی کمی کا شکار ہوجاتا ہے ، شروع میں تو یہ پیاس زیادہ تکلیف کا باعث نہیں بنتی مگر وقت گزرنے کے ساتھ پانی کی کمی جسم کو نقصان پہنچانے لگتی ہے اور دیگر امراض جیسے بلڈ شوگر کو بڑھانے کا باعث بن جاتی ہے ، اس دوران منہ ہر وقت خشک محسوس ہوتا ہے اور پانی پینے کے کچھ دیر بعد ہی وہ پھر خشک ہوجاتا ہے

تاریخ اشاعت : 2016-10-13 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock