افغانستان میں سلامتی کی بگڑتی صورتحال پر پاکستان کی تشویش

اسلام آباد ، پاکستان کی سیاسی و عسکری قیادت پر مشتمل ’نیشنل سکیورٹی کمیٹی‘ کے بدھ کو ہونے والے اجلاس میں ’’قومی و علاقائی سلامتی، خاص طور پر افغانستان میں سکیورٹی کی صورت حال پر غور کیا گیا‘‘۔ وزیر اعظم نواز شریف کی سربراہی میں ہونے والے اس اجلاس میں فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ اور انٹیلی جنس ادارے ’آئی ایس آئی‘ کے ڈائریکٹر جنرل لفٹیننٹ جنرل نوید مختار، مسلح افواج کے سربراہان اور اہم وفاقی وزار شریک تھے۔ اجلاس کے بعد جاری بیان کے مطابق، افغانستان کے دارالحکومت کابل میں گزشتہ ہفتے ہونے والے دہشت گرد حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے افغان عوام سے یکجہتی کا اظہار کیا گیا۔ بیان کے مطابق، قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں افغانستان میں سلامتی کی بگڑتی ہوئی صورت حال پر تشویش کا اظہار کیا گیا اور کابل حملے کے بعد افغانستان کی طرف سے پاکستان پر لگائے جانے والے الزامات کو ایک مرتبہ پھر ’’بے بنیاد‘‘ قرار دے کر ’’مسترد کر دیا گیا

تاریخ اشاعت : 2017-06-07 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock