نیویارک میں پاکستانی اور سکھ کمیونٹی کا مشترکہ اجلاس پاکستانی امریکن تھنک ٹینک کے زیر اہتمام پاکستانی اور سکھ کمیونٹیز کا تاریخ ساز اجتماع  

 

ہندوستان ظلم سے کشمیری عوام کو حق کے حصول کی جدوجہد سے نہیں روک سکتا، سکھوں نے 1947سے پہلے قائد اعظم کی بات مانی ہوتی تو آج ان کی تاریخ مختلف ہوتی

 

تھنک ٹنک کے زیر اہتمام منقدہ اجتماع میں خالصتان تحریک کے روح رواں اور عالمی شہرت یافتہ سکھ رہنما ڈاکٹر امر جیت سنگھ نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی اور تفصیلی خطاب کیا

 

تقریب کے اہتمام میں تھنک ٹنک کے راجہ رزاق‘ سلیم ملک‘ چوہدری خورشید احمد بھلی ،فریدہ خان‘ وسیم سید،آصف بیگ ،مجیب لودھی اور فیاض خان سمیت دیگر نے کردار ادا کیا شفیق صدیقی ، سردار سوار خان ، فائق صدیقی ، خورشید بھلی ، ڈاکٹر شفیق صدیقی ، معوذ صدیقی ،رانا رمضان اور وکیل انصاری سمیت کمیونٹی کی مقامی شخصیات وقائدین کا خطاب

 

نیویارک(خصوصی رپورٹ)پاکستانی امریکی تھنک ٹینک کے زیر اہتمام پاکستانی اور سکھ دانشوروں کا ایک تاریخ ساز اجتماع منعقد ہوا جس میں پاکستانی اور سکھ کمیونٹیز کے اراکین نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔دونوں کمیونٹیزنے ایک دوسرے کے کاز کی بھرپور حمایت کا اعلان کیا۔خالصتان تحریک کے روح رواں ڈاکٹر امرجیت سنگھ نے کہا کہ بھارتی مظالم کے خلاف پاکستانیوں اور سکھوں کا اتحاد بہت ضروری ہے۔

 

انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام پر بھارتی ظلم وستم کی سختی سے مذمت کرتے ہیں اور ان کے حق خودارادیت کی حمایت کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی عوام بھی سکھوں کی خالصتان تحریک میں ہمارے ساتھ ہیں۔قبل ازیں خراب موسم بھی لوگوں کی بڑی تعداد کو خالصتان تحریک کے سربراہ کو سننے سے نہ روک سکا جو اپنی کمیونٹی کے متعدد افراد کے ہمراہ تقریب میں شریک ہوئے تھے۔پاکستانی سکھ اور کشمیری کمیونٹیز کے دانشوروں ،سماجی ،سیاسی حلقوں سے تعلق رکھنے والے افراد اور فیملیز ڈاکٹر امرجیت کے اظہار خیال کو سنا اور بے حد تعریف کی۔

 

تقریب کا اہتمام تھنک تنظیم کے صدر راجہ رزان،جنرل سیکرٹری سلیم ملک نائب خورشید احمد بھلی،رسم سید،انفارمیشن سیکرٹری فریدہ خان ،فیاض خان اور دےگر نے مل کر کیاتھا۔سلیم ملک اور فریدہ خان نے باری باری نظامت کے فرائض انجام دےئے۔ڈاکٹر امرجیت نے لگ بھگ ایک گھنٹہ کے خطاب میں سکھوں اور کشمیریوں کی نسل کشی پر بھارت کی سخت مذمت کی ۔انہوں نے کہا کہ ہم نے تقسیم کے وقت بھارت کو سمجھنے میں غلطی کی جس کی وجہ سے ہمیں یہ حالات دیکھنا پڑرہے ہیں۔ہم نے ہندو پنڈت کی باتوں میں آکر تاریخ کی سب سے بڑی غلطی کی۔جس کا نتےجہ ہم نے1984ءمیں گولڈن ٹیمپل پر بھارتی سکیورٹی فورسز کے حملہ کی صورت میں بھگتاہے۔انہوں نے 1947ءمیں سکھوں اور مسلمانوں کے درمیان قتل وغارت کو سکھ لیڈروں کی غلطی قرار دیا جس پر سکھ قوم معافی کی طلبگار ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر پاکستانی عوام حکومت اور اہل وطن اور حکمت وعلم مدد کریں تو ہندوستان تقسیم ہوسکتاہے۔انہوں نے کہا کہ کشمیری نوجوان دو ماہ سے جدوجہد آزادی کی نئی تاریخ رقم کررہے ہیں۔انہوں نے دےگر قوموں کیلئے راستہ فراہم کردیاہے۔ڈاکٹر امرجیت سنگھ نے کہا کہ ہم پاکستانی امریکن تھنک ٹینک کی طرح سکھ تھنک ٹینک بھی تشکیل دیں گے۔

 

پروگرام کے انعقاد پر پاکستانی کمیونٹی کے مختلف طبقوں نے پاکستانی امریکن تھنک ٹینک کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ راجہ رزاق،سلیم ملک،خورشید احمد بھلی، وسیم سید اور ان کے ساتھےوں نے سکھ اور پاکستانی کمیونٹی کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا کرکے تاریخ ساز کارنامہ انجام دیاہے۔اس کیلئے وہ سب مبارکباد اور خراج تحسین کے مستحق ہیں اپنی نوعیت کی پہلی تقریب تھی جس میں دونوں کمیونٹیز کے100سے زائد افراد شریک ہوئے ۔پاکستانی امریکن تھنک ٹینک نے بھارت کا اصل چہرہ بے نقاب کردیاہے۔ڈاکٹر شفیق،وکیل انصاری،شفیق صدیقی،معاذ معوذ صدیقی،نائق صدیقی اور دےگر نے کہا کہ راجہ رزاق،سلیم خورشید بھلی،فریدہ خان،فیاض خان اور وسیم سید نے تھنک ٹینک کے ذرےعے پاکستانی کمیونٹی کو روایتی میلے ٹھیلے کی ساکھ سے نکال کر پڑھے لکھے دور میں داخل کردیاہے۔

 

تقریب سے خطاب کرنے والوں میں تھنک ٹینک کے نائب صدر خورشید بھلی،کشمیری رہنما سردار سوارخان،رمضان خان،وکیل انصاری اور دےگر نے بھی اظہار خیال کیا۔

تاریخ اشاعت : 2016-10-13 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock