پاک امریکہ بزنس کانفرنس میں دونوں ممالک ایک دوسرے کی بزنس کمیونٹی کے لئے سہولت کار کا کام کررہے ہیں ،خرم دستگیر

 

 

نیویارک میں پاک امریکہ بزنس کانفرنس، وفاقی وزیر تجارت خرم دستگیر کی خصوصی شرکت، لیگی عہدیداروں کا ائیرپورٹ پر استقبال

نیویارک(خصوصی رپورٹ) پاکستان اور امریکہ کے نجی بزنس شعبوں میں باہمی تعاو ن و تجارت کے فروغ کے سلسلے میں پاک امریکن بزنس کانفرنس نیویارک میں منعقد ہوئی جس میں وفاقی وزیر تجارت خرم دستگیر خان ، امریکہ میں پاکستانی سفیر جلیل عباس جیلانی سمیت اعلیٰ امریکی حکام اور دونوں ممالک کے آئی ٹی،زراعت، ہیلتھ کئیر اور فیشن ایپرل سمیت مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے بزنس کمیونٹی کی اہم شخصیات اور ارکان نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔


خرم دستگیر نے نیویارک پہنچنے کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ یہ اس نوعیت کی تیسری کانفرنس ہے ۔ پہلی کانفرنس دوبئی میں جبکہ دوسری کی ہم نے اسلام آباد میں میزبانی کی جس میں امریکی سیکرٹری کامرس نے خصوصی شرکت کی تھی اور اب یہ تیسری کانفرنس نیویارک میں منعقد ہو رہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان حکومتی سطح پر دوطرفہ تجارتی روابط کے فروغ کے سلسلے میں اقدامات ہورہے ہیں لیکن ان اقدامات کے متوازی اس کانفرنس جیسے اقدامات بھی کئے جا رہے ہیں جن کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ دونوں ممالک کے بزنس سیکٹر ز کے افراد اور اداروں کی مدد کی جائے تاکہ ان کا باہمی تعاون اور تجارت میں فروغ ہو ۔ اس کام میں امریکہ اور پاکستان دونوں کی حکومتیں ایک سہولت کار کا کام کرتی ہیں ۔کانفرنس کا ایجنڈا نجی بزنس کمیونٹی خود طے کرتی ہیں اور ہمارا کام یہ ہے کہ ہم ان کے ایجنڈے پر عملدرامد پر جس حد تک بھی ممکن ہو، کو یقینی بنائیں۔ اسی سلسلے میں نیویارک کی کانفرنس اہم ہے ۔


قبل ازیں خرم دستگیر جب جمعرات کو نیویارک پہنچے تو ان کا جے ایف کے ائیرپورٹ پر قونصل جنرل راجہ علی اعجاز کے علاوہ پاکستان مسلم لیگ (ن) یو ایس اے اور کمیونٹی کی مقامی اہم شخصیات روحیل ڈار، میاں فیاض، رانا سعید، انور واسطی، احمد جان ،جاوید صدیقی، ناصر بٹ، رانا ریاض،یاسین بھٹی ، راجہ آزادگل، میاں محمد رو¿ف، عمر ڈار، اعجاز بٹ ،حمید مغل ، خواجہ امجد،عزیز بٹ سمیت دیگر نے پرتپاک استقبال کیا اور انہیں نیویارک آمد پر خوش آمدید کہا ۔



تاریخ اشاعت : 2016-06-02 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock