مسلم اینڈ امیگریشن کولیشن فار جسٹس کے زیر اہتمام سپریم کورٹ برونکس کے سامنے مظاہرہ

 

نیویارک سٹیٹ اور سٹی کے منتخب و اعلیٰ قائدین سمیت مختلف عقائد سے تعلق رکھنے والی کمیونٹیز کا مسلم امریکن کمیونٹی کے ساتھ اظہار یکجہتی ، کوئی بھی امتیازی سلوک و پالیسی قابل قبول نہیں ، مقررین


نیویارک (خصوصی رپورٹ) امریکہ میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی تارکین وطن کو ڈیپورٹ کرنے کی پالیسی کیخلاف احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے ۔اس سلسلے میں نیویارک کے علاقے برونکس میں واقع سپریم کورٹ کی عمارت کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا ۔ مسلم اینڈ امیگریشن کولیشن فار جسٹس کے زیر اہتمام ہونے والے اس احتجاجی مظاہرے میں مختلف کمیونٹیز کے مقامی قائدین و ارکان نے شرکت کی اور امیگرنٹس کمیونٹیز کے ساتھ اپنی مکمل یکجہتی کا اظہار کیا ۔
احتجاجی مظاہرے میں نیویارک سٹیٹ اور سٹی کے منتخب و اعلیٰ قائدین نے بھی شرکت کی اور کہا کہ وہ اس مشکل اور آزمائش کی گھڑی میں امیگرنٹ کمیونٹیز کے ساتھ کھڑے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ وہ حکومت کی کسی بھی امتیازی پالیسی کے خلاف اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے
احتجاجی مظاہرے میں پاکستانی و مسلم کمیونٹی کے مقامی قائدین و ارکان کا کہنا تھا کہ وہ اتحاد و یکجہتی کا مظاہرہ کرتے ہوئے درپیش چیلنجوں سے نبرد آزما ہوں ۔ مقررین کا کہنا تھا کہ وہ حکومت کی سفری پابندیوں اور سرحدوں پر دیوار کی تعمیر کے فیصلے کے خلاف اس وقت تک اپنا احتجاجی جاری رکھیں گے کہ جب تک حکومت اپنے یہ فیصلے واپس نہیں لے لیتی ۔


تاریخ اشاعت : 2017-02-13 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock