نیویارک میں بنگالی امام دن دیہاڑے قتل

 

نیویارک (محسن ظہیر سے ) نیویارک کے علاقے اوزون پارک، کوینز میں بنگلہ دیشی امریکن کمیونٹی سے تعلق رکھنے والے امام کو دن دیہاڑے نامعلوم شخص نے قتل کر دیا اور قاتل واردات کے بعد جائے وقوعہ سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا۔ تفصیلات کے مطابق ہفتے کی دوپہر پونے دو بجے کے قریب جامع مسجد الفرقان کے امام علاو¿الدین ایک بزرگ ساتھی نمازی ماخون میاں کے ساتھ اپنے گھر کی جانب واپس جا رہے تھے کہ گہری نیلے رنگ کی شرٹ میں ملبوس ایک شخص سیدھا ان کے پاس آکر رکا، اس سے سیدھی فائرنگ کی ۔ امام مسجد کو سر پر گولی لگی جس کی وجہ سے وہ موقع پر ہی جاں بحق ہو گئے جبکہ ماخون میاں کو سینے میں گولی لگی جس کی وجہ سے وہ شدید زخمی ہو گیا ۔
واقعہ کی اطلاع ملنے کے بعد پولیس جائے وقوعہ پر پہنچ گئی اور مفرور قاتل تلاش شروع کر دی گئی ہے ۔جامعہ مسجد الفرقان کے مشیر محمد مجاہد الاسلام نے چینل فائیو سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میں نے امریکہ میں اپنے 30سے زائد سالہ عرصے میں امام علاو¿ الدین جیساعاجز شخص نہیں دیکھا ۔ وہ سات سال سے ہماری مسجد میں امامت کے فرائض انجام دے رہے تھے ۔کام سے کام رکھنے والے اور ایک عاجس شخص تھے ۔
نیویارک کی مسلم امریکن کمیونٹی اس واقعہ کے بعد شدید پریشانی کا شکار ہو گئی ہے ۔ امریکہ میں اسلام اور مسلمانوں کے کردار کے حوالے سے جاری مباحثے کی وجہ سے پہلے ہی ایک تناو¿ کی صورتحال موجود تھی جس کے بعد اس واقعہ نے کمیونٹی میں خوف و ہراس کو بڑھا دیا ہے


تاریخ اشاعت : 2016-08-13 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock