سپریم کورٹ نےحسین نواز کی تصویر لیک ہونے کے بارے میں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کو نوٹس جاری کرتے ہوئے اُن سے اگلے چار روز میں جواب طلب کرلیا

پاکستان کی سپریم کورٹ نے پاناما لیکس کی تحقیقات سے متعلق وزیراعظم کے صاحبزادے حسین نواز کی تصویر لیک ہونے کے بارے میں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کو نوٹس جاری کرتے ہوئے اُن سے اگلے چار روز میں جواب طلب کرلیا ہے۔ جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے یہ نوٹس وزیر اعظم کے صاحبزادے حسین نواز کی طرف سے دائر کی گئی درخواست پر دیا گیا ہے۔ نامہ نگار شہزاد ملک کے مطابق اس درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ اس تصویر کو جاری کرنے کا مقصد تفتیش کے لیے پیش ہونے والے افراد کو نہ صرف دباؤ میں لانا ہے بلکہ اُن کے لیے یہ واضح پیغام ہے کہ وہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے رحم و کرم پر ہوں گے۔

تاریخ اشاعت : 2017-06-07 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock