صحافت کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنا وقت کی ضرورت ہے، فورتھ پلر

 

امریکہ اور پاکستان میں صحافتی برادری کو صحافت کے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے میں اپنا کردار ادا کرنے کے عزم کے ساتھ قائم تنظیم فورتھ پلر ڈاٹ آرگ کے زیر اہتمام نیویارک میںخصوصی سیمینار


فاروق مرزا کی صدارت و قیادت میں قائم فورتھ پلر ڈاٹ آرگ تنظیم کے زیر اہتمام منعقدہ خصوصی سیمینار میں قونصل جنرل نیویارک راجہ علی اعجاز سمیت صحافیوں اور کمیونٹی کی اہم شخصیات کی شرکت


 فورتھ پلر کی جانب سے جلد ایک ایسا ڈیجیٹل پلیٹ فارم متعارف کروایا جا رہا ہے جس کو استعمال کرتے ہوئے صحافی اور اہل دانش حضرات اہم قومی و عالمی معاملات کے حوالے سے حقائق کو چیک کر سکیں گے
 

دنیا میں ترقی کے ساتھ ساتھ ہر شعبے کے تقاضے بدل رہے ہیں ۔صحافت کے شعبے کو جدید صحافت کے تقاضوں سے ہم آہنگ کرنا کوئی آپشن نہیں بلکہ ضرورت ہے ، سیمینار سے شرکاءکے خطابات

نیویارک (خصوصی رپورٹ) امریکہ اور پاکستان میں صحافتی برادری کو صحافت کے جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے میں اپنا کردار ادا کرنے کے عزم کے ساتھ قائم تنظیم فورتھ پلر ڈاٹ آرگ کے زیر اہتمام گذشتہ ہفتے نیویارک میں پہلی خصوصی سیمینار منعقد ہوا جس میں تنظیم کی جانب سے واضح کیا گیا کہ نہ صرف امریکہ بلکہ پاکستان میں موجود صحافیوں کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ بنانے کےلئے جس حد تک بھی ممکن ہو ، اپنا کردرا ادا کیا جائیگا۔

فاروق مرزا کی صدارت و قیادت میں قائم فورتھ پلر ڈاٹ آرگ تنظیم کے زیر اہتمام منعقدہ خصوصی سیمینار میں قونصل جنرل نیویارک راجہ علی اعجاز نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی جبکہ اوورسیز پاکستانی کمیشن کے ظہیر احمد مہر اورپاکستانی امریکن ہیومین رائٹس کمیشن نیویارک کے سید المدار حسین شاہ کے علاوہ پاکستانی امریکن جرنلسٹس اور کمیونٹی کی مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی اہم شخصیات مجیب لودھی،راجہ رزاق، منظور حسین ، فائق صدیقی ، کرنل (ر) مقبول ملک ، محسن ظہیر، سیمی اسد، ، ارشد چوہدری ،سارہ ،علی حیدر، عمر فاروق، سید کوثر شاہ ،آغا افضل خان ، راجہ ضمیر پوران ، ارشاد شیخ ، طارق محمود ایڈوکیٹ ، لئیق احمد ، فرح ملک ،عروج ،رضوان خالد ، اسد نقوی ، محمد حسین ایڈوکیٹ ،عدیل رانا، حمیر ا کھوکھر، سونو بٹ ، تسنیم شہزاد، مسعود احمد کمبوہ ،نسیم علی زئی ، فضل حق سید،جنید تنولی ، امتیاز حسین و دیگر ارکان نے شرکت کی ۔
فارو ق مرزا نے تنظیم کے زیر اہتمام پاکستان میں اب تک کی جانیوالی خدمات اور آئندہ لائحہ عمل کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ شعبہ صحافت کے حوالے سے عالمی شہرت یافتہ اارے پوائنٹر یونیورسٹی کے زیر اہتمام وہ اب تک پاکستان میں متعدد تربیتی پروگرام و ورکشاپس منعقد کر چکے ہیں جن میں پاکستانی صحافیوں کو صحافت کے جدید تقاضوں کو پیش نظر رکھتے ہوئے اپنے فرائض منصبی ادا کرنے کے حوالے سے خصوصی تربیت دی گئی ۔

 

انہوں نے بتایا کہ بیس کروڑ آبادی کے ملک پاکستان میں صحافت کا اہم کردار ہے لیکن صحافت کے شعبے سے وابستہ افراد کی اکثریت سمیت اداروں کو سب سے بڑا مسلہ جدید تربیت کے ساتھ ساتھ مالی شعبے میں درپیش چیلنجز ہیں ۔انہوں نے کہا کہ ان دونوں شعبوںمیں بیک وقت کام کرنے کی ضرورت ہے ۔ اس سلسلے میں فورتھ پلز جس حد تک ممکن ہوا، اپنا کردار اپنی بساط کے مطابق ادا کرے گی ۔ اس سلسلے میں ہمیں صحافتی برادری کے ساتھ ساتھ کمیونٹی کے تعاون کی ہمیشہ ضرورت رہے گی ۔


قونصل جنرل راجہ علی اعجاز نے کہا کہ صحافت ایک اہم شعبہ ہے ۔پاکستانی امریکن کمیونٹی کو اس شعبے میں بھی خود کو جدید تقاضوں سے ہم آہنگ کرنا چاہئیے ۔ اس سلسلے میں فورتھ پلر جیسے تنظیموںکی خدمات قابل ستائش ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ میں بسنے والی کمیونٹی کو تعلیم اور اس کے بعد اعلیٰ سے اعلیٰ تعلیم کے حصول کو یقینی بنانا چاہئیے ۔ تعلیم آگے بڑھنے اور ترقی کرنے کا ایک موثر ترین ذریعہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ میں کمیونٹی کی بڑی تعداد موجود ہے ۔ انہیں انفرادی اور اجتماعی کامیابیوں کو مل کر یقینی بنانا چاہئیے ۔


سیمینار میں ویڈیو سلائیڈ شو کے ذریعے فورتھ پلر کی جانب سے سارہ نے تنظیم کی جانب سے اب تک کی جانیوالی کارکردگی کے اہم پہلووں کو شرکاءکے سامنے پیش کیا ۔ظہیر احمد مہر اور سید المدار حسین شاہ بخاری نے کہا کہ وہ انسانی حقوق اور اوورسیز کمیونٹی کے مسائل کے حل کے سلسلے میں مختلف پلیٹ فارمز پر جیسے اپنا اپنا کردار ادا کررہے ہیں، ایسے انہیں خوشی ہے کہ فورتھ پلر کے پلیٹ فارم سے ایک ایسی تنظیم سامنے آئی ہے کہ جو صحافت کے شعبے میں خدمات انجام دینے کے عزم کے ساتھ اپنا کردار ادا کررہی ہے ۔ ہم سب کو انہیں سپورٹ کرنا چاہئیے ۔


سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے فائق صدیقی ، مجیب لودھی ، محسن ظہیر، ارشد چوہدری ، منظور حسین ،راجہ رزاق اور سیمی اسد و دیگر نے فورتھ پلر کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ صحافت اور قوموں کا عروج و زوال ایک دوسرے سے وابستہ ہے۔ دونوں کو ایک ساتھ ترقی کو یقینی بنا نا ہوگا۔

 

انہوں نے کہا کہ دنیا میں ترقی کے ساتھ ساتھ ہر شعبے کے تقاضے بدل رہے ہیں ۔صحافت کے شعبے کو جدید صحافت کے تقاضوں سے ہم آہنگ کرنا کوئی آپشن نہیں بلکہ ضرورت ہے ۔ اس سلسلے میں جو بھی فرد اور تنظیمیں اپنا کردرا اد اکریں ، ان کی ہر ممکن سپورٹ کرنی چاہئیے ۔

 

انہوں نے کہا کہ صحافت ایک مقدس پیشہ ہے ۔ صحافی کے پاس معلومات ایک امانت کی طرح ہوتی ہیں جس میں اسے کسی بھی حال میں خیانت نہیں کرنی چاہئیے ۔حقائق کو مکمل جانچ کے بعد پوری ایمانداری سے بیان اور پیش کرنا چاہئیے ۔اپنی شفافیت اور غیر جانبداری کو یقینی بنانا چاہئیے ۔


آخر میں فاروق مرزا نے اعلان کیا کہ فورتھ پلر کی جانب سے جلد ایک ایسا ڈیجیٹل پلیٹ فارم متعارف کروایا جا رہا ہے جس کو استعمال کرتے ہوئے صحافی اور اہل دانش حضرات اہم قومی و عالمی معاملات کے حوالے سے حقائق کو چیک کر سکیں گے ۔

 

 

تاریخ اشاعت : 2017-09-02 00:00:00
مقبول ترین خبریں
امیگریشن خبریں
SiteLock