صحت و سائنس

امریکہ میں سمندری طوفان فلورنس کی آمد، 10 لاکھ لوگوں کا انخلا

کیٹگری چار کے اس سمندری طوفان کے ساحل سے ٹکرانے کے بعد مختلف علاقوں میں 15 سے 30 انچ بارش کی توقع ہے جس سے بڑے علاقے میں سیلاب آنے کا خدشہ ہے۔محکمہ موسمیات

کیٹگری چار کے طوفان سے گھروں کی چھتین اڑ سکتی ہیں، درخت اکھڑ سکتے ہیں اور کئی روز تک بجلی منقطع ہو سکتی ہے جس کے باعث متاثرہ علاقے کئی ہفتے یا ماہ تک رہنے کے قابل نہیں رہیں گے،ماہرین

نیویارک (اردو نیوز )امریکہ کی ریاست جنوبی کیرولائنا کے گورنر ہنری میک ماسٹر نے جنوبی کیرولائنا کے تمام تر ساحلی علاقوں سے رہائشیوں کے جبری انخلا کے احکامات جاری کر دیے ہیں۔امریکہ کی دو ریاستوں شمالی اور جنوبی کیرولائنا میں حکام نے شہریوں کو خبردار کیا ہے کہ وہ جمعہ کے روز آنے والے سمندری طوفان فلورنس کے ساتھ تباہ کن ہواو¿ں اور شدید بارشوں کیلئے تیار رہیں۔

وائس آف امریکہ کی رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ طوفان کی خبر دینے والے ادارے نیشنل ہری کین سینٹر (این ایچ سی) کا کہنا ہے کہ طوفان فلورنس انتہائی تباہ کن اور خطرناک طوفان ہے۔ کیٹگری چار کے اس سمندری طوفان کے ساحل سے ٹکرانے کے بعد مختلف علاقوں میں 15 سے 30 انچ بارش کی توقع ہے جس سے بڑے علاقے میں سیلاب آنے کا خدشہ ہے۔
این ایچ سی کے مطابق یہ طوفان کئی روز تک جاری رہ سکتا ہے اور اس سے شمالی اور جنوبی کیرولائنا کے علاوہ ریاست ورجینیا کے جنوبی علاقے بھی شدید طور پر متاثر ہو سکتے ہیں۔ اس دوران 220 کلومیٹر فی گھنٹے سے تیز ہوائیں چلنے کا امکان ہے اور توقع ہے کہ منگل اور بدھ تک اس میں مزید شدت پیدا ہو جائے گی۔ماہرین کا کہنا ہے کہ کیٹگری چار کے طوفان سے گھروں کی چھتین اڑ سکتی ہیں، درخت اکھڑ سکتے ہیں اور کئی روز تک بجلی منقطع ہو سکتی ہے جس کے باعث متاثرہ علاقے کئی ہفتے یا ماہ تک رہنے کے قابل نہیں رہیں گے۔
جنوبی کیرولائنا کے گورنر میک ماسٹر نے ریاست کے تمام تر ساحلی علاقوں سے لوگوں کے جبری انخلا کے احکامات جاری کئے ہیں اور توقع ہے کہ ان علاقوں سے کم سے کم دس لاکھ افراد کو اپنے گھروں کو چھوڑنا پڑے گا۔شمالی کیرولائنا کے گورنر رے کوپر نے بھی ریاست کے ساحل کے قریب واقع جزیروں سے لوگوں کے انخلا کے احکام جاری کئے ہیں۔ انہوں نے صدر ٹرمپ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ وفاقی سطح پر شدید خطرے کا اعلان کریں تاکہ ریاست میں ہونے والے متوقع نقصان سے نمٹنے کیلئے بھرپور کارروائی کی جا سکے۔
ورجینیا کے گورنر ریلف نارتھم نے سیلاب کے خطرے سے دوچار ان علاقوں سے لوگوں کے انخلاءکا حکم دیا ہے جہاں امریکہ کی مصروف ترین بندرگاہوں میں سے اور دنیا کا سب سے بڑا بحری اڈا موجود ہے۔سمندری طوفان فلورنس کے انتباہ کے پیش نظر، واشنگٹن ڈی سی کی میئر موریل باوزر نے فوری طور پر اگلے 15 روز کے لیے ہنگامی صورت حال کا اعلان کیا ہے۔

Tags
Show More

Related Articles

Close