اوورسیز پاکستانیز

سال2018 کے انکم ٹیکس میں اب بھی کمی کی جاسکتی ہے، جمال محسن

فنانشل ایڈوائزر جمال محسن ملازمت پیشہ اور سیلف ایمپلائیڈ ٹیکس فائنل کرنے سے قبل جمال محسن سے رابطہ کریں

نیویارک(اردو نیوز) فنانشل پلاننگ پر اردو میں ” باتیں پیسوں کی“ کے مصنف اور ممتاز فنانشل ایڈوائزر جمال محسن نے بتایا ہے کہ گزشتہ برس کے انکم ٹیکس میں کمی اب بھی کی جاسکتی ہے۔ ٹیکس فائل کرنے سے قبل ہر ایمپلائی انفرادیIRA اور بزنس اونر یا سیلف ایمپلائز حضراتSEP-IRA میں رقم ڈال کر اپنی آمدنی پر لاگو ہونے والے ٹیکس میں کمی کر سکتے ہیں۔ ریٹائرمنٹ میںڈالی ہوئی رقم اور اس پر ملنے والی ریٹرن(منافع) پر ٹیکس ہر سال نہ دینے کی چھوٹ کی جانب سے بطور محترک دی جاتی ہے لہٰذا اس میں ڈالی ہوئی رقم نسبتاً تیزی سے بڑھتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آئی آر اے پلان بالکل سیدھا سادھا ہے اور چند منٹوں میں کاغذی کاروائی مکمل ہو جاتی ہے ۔ تفصیلات

جمال محسن کے آفس سے معلوم کی جا سکتی ہے ۔
جمال محسن نے وضاحت کرتے ہوئے بتایا کہ حکومت کی جانب سے ٹیکس میں معافی اس بات کی نشاندہی کرتی ہے کہ سوشل سیکورٹی بڑھاپے میں ناکافی ہے اور بڑھاپے کےلئے پس انداز کرنا اور ٹیکس میں فائدہ اٹھانا ہر شخص کی ذمہ داری ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آئی آر اے میں ہر شخص اور گھریلو بیوی بھی سالانہ پانچ ہزار پانچ سو ڈالرز بچا سکتی ہے جبکہ پچاس سے زائد عمر کے اشخاص چھ ہزار پانچ سالانہ آئی آر اے ڈال کر اپنی ٹیکس ایبل آمدن میں کمی کر سکتے ہیں جبکہ سیلف ایمپلائیڈ اور بزنس اونر اپنی آمدنی کا پچیس فیصد یا زیادہ سے زیادہ 55ہزار کی رقم اپنے ریٹائرمنٹ پلان میں ڈال کر قانون کے دائرے میں رہتے ہوئے ٹیکس میں کمی کر سکتے ہیں

Tags
Show More

Related Articles

Close